سورۃ الشمس
بسم الله الرحمن الرحيم ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اللہ کے نام سے شروع جو نہایت مہربان رحم والا (ف۱)
وَالشَّمْسِ وَضُحَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    سورج اور اس کی روشنی کی قسم
وَالْقَمَرِ إِذَا تَلَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور چاند کی جب اس کے پیچھے آئے (ف۲)
وَالنَّهَارِ إِذَا جَلَّاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور دن کی جب اسے چمکائے (ف۳)
وَاللَّيْلِ إِذَا يَغْشَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور رات کی جب اسے چُھپائے (ف۴)
وَالسَّمَاء وَمَا بَنَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور آسمان اور اس کے بنانے والے کی قسم
وَالْأَرْضِ وَمَا طَحَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور زمین اور اس کے پھیلانے والے کی قسم
وَنَفْسٍ وَمَا سَوَّاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور جان کی اور اس کی جس نے اسے ٹھیک بنایا(ف۵)
فَأَلْهَمَهَا فُجُورَهَا وَتَقْوَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    پھر اس کی بدکاری اور اس کی پرہیزگاری دل میں ڈالی(ف۶)
قَدْ أَفْلَحَ مَن زَكَّاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    بے شک مراد کو پہنچایا جس نے اسے (ف۷) ستھرا کیا(ف۸)
وَقَدْ خَابَ مَن دَسَّاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور نامراد ہوا جس نے اسے معصیت میں چُھپایا
كَذَّبَتْ ثَمُودُ بِطَغْوَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    ثمود نے اپنی سرکشی سے جھٹلایا(ف۹)
إِذِ انبَعَثَ أَشْقَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    جب کہ اس کا سب سے بدبخت (ف۱۰) اٹھ کھڑا ہوا
فَقَالَ لَهُمْ رَسُولُ اللَّهِ نَاقَةَ اللَّهِ وَسُقْيَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    تو ان سے اللّٰہ کے رسول (ف۱۱) نے فرمایا اللّٰہ کے ناقہ (ف۱۲) اور اس کی پینے کی باری سے بچو (ف۱۳)
فَكَذَّبُوهُ فَعَقَرُوهَا فَدَمْدَمَ عَلَيْهِمْ رَبُّهُم بِذَنبِهِمْ فَسَوَّاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    تو انہوں نے اسے جھٹلایا پھر ناقہ کی کوچیں کاٹ دیں تو ان پر ان کے رب نے ان کے گناہ کے سبب (ف۱۴) تباہی ڈال کر وہ بستی برابر کردی(ف۱۵)
وَلَا يَخَافُ عُقْبَاهَا ۝
ترجمۂ کنزالایمان:    اور اس کے پیچھا کرنے کا اسے خوف نہیں(ف۱۶)